آپ کو نکاح کی اتنی جلدی تھی قوم کو وجہ تو بتادیں، خاور مانیکا کا عمران خان اور بشریٰ بی بی سے سوال

Share

بانی پی ٹی آئی کی اہلیہ بشریٰ بی بی کے سابقہ شوہر خاور مانیکا نے کہا ہے کہ آپ کو نکاح کی اتنی جلدی تھی قوم کو وجہ تو بتادیں۔اسلام آباد میں اپنی وکلا کی ٹیم کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے خاور مانیکا کا کہنا تھا کہ چند مخصوص گروپس نے 4 سال سے میرے خاندان کو برابھلا کہا۔ انہوں نے کہا کہ میں آج اپنی صفائی دینے نہیں آیا۔ میری بھی باتیں سنیں جیسا کہ میں نے تحمل سے سب کو سنا۔خاور مانیکا نے میڈیا کے سامنے عدت کیس کی شرعی حیثیت کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ملزم اور مجرم بانی پی ٹی آئی اور بشریٰ اس کا حصہ ہیں۔بشریٰ بی بی کے سابقہ شوہر کا کہنا تھا کہ اگر کسی گھر میں طلاق ہو تو جلد بازی نہیں ہوتی۔اگر طلاق ہو گئی تو کیا برا تھا کہ نکاح کے لیے رک جاتے؟انہوں نے کہا کہ آج وکلا کی ٹیم محنت پر لگی ہے کہ 39 دن کی مدت ثابت کرنی ہے۔انکا کہنا تھا کہ پی ٹی آئی نے یکم جنوری کے نکاح کے بعد 7 جنوری کو بیان جاری کیا نکاح نہیں ہوا۔ پی ٹی آئی سینٹرل سیکریٹریٹ نے نوٹیفکیشن جاری کیا نکاح کی خبر غلط تھی، انہوں نے یہ بھی کہا کہ عدت پوری ہونے کے بعد نکاح کرلیتی، رک جاتی۔ آپ کو نکاح کی اتنی جلدی تھی قوم کو وجہ تو بتادیں۔خاورمانیکا کا کہنا تھا کہ بانی پی ٹی آئی اور بشری نکاح کیس کے مجرم ہیں، نکاح کا جھوٹ چھپا کر مغربی ممالک کی مثال دیتے ہیں۔انکا یہ بھی کہنا تھا کہ پی ٹی آئی کی جانب سے پیمرا کو بھی شکایت دی گئی، پیمرا سے پی ٹی آئی کی جانب سے دی گئی شکایت کو دیکھا جاسکتا ہے۔بشریٰ بی بی کے سابقہ شوہر نے کہا کہ آج تک اس شخص سے نہ پوچھا گیا آپ نے نکاح کیوں چھپایا؟ مغرب کی مثالیں دیتے ہیں وہاں ایسے معاملے پر استعفیٰ دے دیتے ہیں، خاور مانیکا نے مزید کہا کہ آپ ایک کیس کو لے کر اللّٰہ اور اس کے رسولﷺ کے احکامات کے خلاف کام کر رہے ہیں۔ ایسے معاشرتی معاملات پر اس لیے سزا رکھی تاکہ بگاڑ نہ ہو، عدت اس لیے ہے کہ بگاڑ کے بعد رجوع کے بھی امکانات ہوں۔انکا کہنا تھا کہ میں نے 14 دسمبر کو طلاق دی، بچوں کو بتایا تو وہ رو دئیے، 24 دسمبر کو میرے کزن کی شادی تھی، جہاں میری والدہ کو علم ہوگیا، میری والدہ نے خبر سنی تو اٹیک ہوا اور اسپتال منتقل کردیا گیا۔انہوں نے کہا کہ یہ کیس ہارنے یا جیتنے کا معاملہ نہیں ہے۔